پولیس نے مارکھم کے علاقے میں حادثے کے بعد فرار ہونے والی گاڑی کی ویڈیو ریلیز کر دی
پیل ریجن میں جعلی نوٹوں کی گردش کا انکشاف، پولیس کا شہریوں کو ہوشیار رہنے کا انتباہ
دو بچوں کی ماں کانشے کی حالت میں گاڑی چلانے اورایکسیڈنٹ کرنے پر چالان ، اسکار بورو پولیس
November 20, 2017 قومی آواز ۔ ٹورنٹو: پولیس آفیسر کی نشے کی زیادتی سے ہلاکت کے بعد پولیس اہلکاروں کی چیکنگ کا معاملہ زور پکڑ گیا ٹورنٹو پولیس کے ایک اعلامیے کے مطابق ایک پولیس آفیسر کے نشے کی زیادتی کی وجہ سے ہلاکت کے بعد شہری حلقوں میں یہ مطالبہ زور پکڑ رہا ہے کہ پولیس کے اہلکاروں وقتاً فوقتاً چیکنگ کی جائے تاکہ ان کی صحت اور نشے کی کیفیت کی بر وقت جانچ کی جا سکے ۔ یہ معاملہ اس وقت سامنے آیا جب ٹورنٹو پولیس کا ایک آفیسر مائیکل تھامسن نشے کی زیادتی کی وجہ سے اسپتال لایا گیا جہاں وہ ہلاک ہو گیا۔ مذکورہ پولیس آفیسر خود نشے کا تدارک کرنے والی فورس کا رکن تھا ۔اس واقعے کے بعد ٹورنٹو پولیس کی اہلیت اور کارکردگی پر سوال اٹھنے لگے ہیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں جلد ہی اقدامات متوقع ہیں جس سے صورتحال بہت ہو جائے گی۔ 
مسی ساگا میں خاتون پر چاقو سے حملہ ، خاتون حملہ آور کو پولیس نے گرفتار کر لیا
اسپیڈینا ریلوے اسٹیشن پر مسافروں پر مرچ اسپرے سے حملہ ، دو مسافر زخمی حملہ آور فرار
وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا استعفیٰ دینے سے انکار
کوئٹہ: پاک - چین اقتصادی راہداری کے حوالے سے مشترکہ ایئرشو
اسلام آباد دھرنا ختم نہ کرانے پر انتظامیہ کو توہین عدالت کا شوکاز نوٹس جاری
زمبابوین صدر کا قوم سے خطاب، استعفے کا ذکر تک نہ کیا

اسپاٹ فکسنگ،5کرکٹرز کے نام ای سی ایل میں شامل

March 20, 2017

قومی آواز ۔ (کراچی)اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل میں پانچ مشتبہ کھلاڑیوں محمد عرفان، شاہ زیب حسن ، خالد لطیف ، شرجیل خان اور ناصر جمشید کے نام ای سی ایل میں شامل کردیئے گئے ہیں، نام ای سی ایل میں ڈالنے کی منظوری وزیرداخلہ چودھری نثار کی زیرصدارت اجلاس میں دی گئی۔

ایف آئی اے نے اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کی تحقیقات کے دوران 5 مشتبہ کھلاڑیو ں کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرنے کیلئے وزارت داخلہ سے سفارش کی تھی ۔

ذرائع کے مطابق مشتبہ کھلاڑیوں کے نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی سفارش ایف آئی اے پنجاب کے ڈائریکٹر ڈاکٹر عثمان اور تفتیشی افسر شاہد حسن کی طرف سے کی گئی تھی اور اس ضمن میں وزار ت داخلہ مراسلہ لکھا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہےکہ مذکورہ کھلاڑیوں کے نام مراسلہ تحریر کئے جانے کے 48 گھنٹو ں میں ای سی ایل میں شامل کر لیا گیا ہے ۔

وزیر داخلہ چودھری نثار کا کہنا ہے کہ اسپاٹ فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں کے ساتھ ساتھ بُکیزکے خلاف بھی کارروائی کی جائے۔وزیرداخلہ نےکرکٹ میں جوا اوراس کو فروغ دینے والی تمام ویب سائٹس کوبند کرنے کی ہدایت بھی کی۔

چودھری نثار کا کہنا تھا کہ اسپاٹ فکسنگ معاملے کی ہرپہلوسے شفاف،غیرجانبدارانہ تحقیقات کی جائیں، پاکستان کا نام بدنام کرنے والوں کو قانون کے کٹہرے میں لایا جائے، اسپاٹ فکسنگ میں ملوث شخص کےساتھ کسی قسم کی رعایت نہ برتی جائے۔